41

متاثرین کو ہرممکن ریلیف فراہم کیاجائے ،وزیراعلیٰ جام کمال

دور دراز کے علاقوں میں ریلیف آپریشن کے لئے حکومت بلوچستان کا ہیلی کاپٹر استعمال کیاجائےبرف اوربارش سے متاثرہ تمام علاقوں تک رسائی کویقینی بنایاجائے
سرد ترین موسم میں گیس اور بجلی کا حصول ہر شہری کا حق ہے، ایس ایس جی سی اور کیسکو حکام کو ان مسائل کے فوری حل کا پابند کیا جائے گا،دور ہ کے موقع پربات چیت
کوئٹہ ( آن لائن )وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے برف باری کے زیراثر علاقوں کا فضائی جائزہ لیا، وزیراعلی نے کولپور، لک پاس اور کوئٹہ کے گردونواح کے علاقوں کے فضائی جائزے کے دوران برف سے متاثرہ شاہراہوں اور علاقوں کا معائنہ کیا، صوبائی وزرا میر ضیا لانگو، میر سلیم کھوسہ، کمشنر کوئٹہ عثمان علی خان اور ڈی جی پی ڈی ایم اے عمران زرکون بھی وزیراعلی کے ہمراہ تھے، وزیراعلی نے حکام کو ہدایت کی کہ برف اور بارش سے متاثرہ تمام علاقوں تک رسائی کو یقینی بنایا جائے اور عوام کو ریلیف فراہم کیا جائے، انہوں نے دور دراز کے علاقوں میں ریلیف آپریشن کے لئے حکومت بلوچستان کا ہیلی کاپٹر استعمال کرنے کی ہدایت کی، بعدازاں وزیراعلی نے مشرقی بائی پاس اور بروری روڈ کا بھی دورہ کیا اور وہاں کی صورتحال کا جائزہ لیا، اس موقع پر بروری روڈ پر گیس اور بجلی کی عدم دستیابی کے خلاف احتجاج اور سڑک بند کرنے والے لوگوں سے وزیراعلی نے ملاقات کی، لوگوں نے وزیراعلی کو گیس اور بجلی نہ ہونے سے پیدا ہونے والی مشکلات سے آگاہ کیا، وزیراعلی نے موقع پر موجود کمشنر کوئٹہ کو فوری طور پر ایس ایس جی سی اور کیسکو حکام سے ملاقات کرکے شہریوں کو گیس اور بجلی کی مسلسل فراہمی کو یقینی بنانے کی ہدایت کی، وزیراعلی نے کہا کہ سرد ترین موسم میں گیس اور بجلی کا حصول ہر شہری کا حق ہے، ایس ایس جی سی اور کیسکو حکام کو ان مسائل کے فوری حل کا پابند کیا جائے گا، لوگوں نے وزیراعلی کے عوام دوست رویے کوسراہا